29.1.10

بہارآئی

کل یوں لگا جیسے موسم بدلنے کو ہے۔ دھوپ میں کھڑی گاڑی میں کچھ دیر بعد آ کر بیٹھنے سے جسم و جاں کو جو ایک زندگی آمیز حدت ملتی تھی آج اس کی جگہ کچھ گرمی کا احساس ھوا-فوراً ہی شیشے اتارنے کو دل چاھا۔ پھر چلتی گاڑی میں جہاں شیشہ نیچے کرنے سے ٹھنڈ سی لگتی تھی آج دونوں شیشے اتار کر بھی ایسا نہ لگا بلکہ جو تیز ہوا کے جھونکے آئے وہ نہایت خوشگوار لگے۔ وہ ہوا اپنے اندر بہار کی ایک خبر سی لئے ہوے تھے۔

2 تبصرے:

سعادت said...

آپ تو شاعری بھی کر لیتے ہیں۔ :)

ویسے محکمہَ موسمیات کی پیشین گوئی کے مطابق اگلے چند ہفتوں میں لاہور میں بارش کا امکان ہے۔ اس دوران گاڑی کی کھڑکی کے شیشے نیچے کرنے میں پرہیز کیجیے گا۔

احمد عرفان شفقت said...

اللہ کرے جی بارش تو ہو ہی جائے۔۔۔ بڑی ضرورت ہے بارش کی تو۔

Post a comment